• روزے کی حالت میں مشت زنی (masturbation) کا کفارہ

    دوست کا سوال ہے کہ اگر روزے کی حالت میں نفس غالب آ جائے اور انسان مشت زنی کر لے تو اس کا کیا کفارہ ہے؟ جواب: اگر تو روزے کی حالت میں کسی نے اپنی بیوی سے جماع (intercourse) کر لیا تو دونوں کا روزہ ٹوٹ جاتا ہے۔ اور دونوں اگر اس عمل کے لیے رضامند تھے تو دونوں اس روزے کی قضاء بھی ادا کریں گے اور اس کا کفارہ بھی دیں گے۔ قضاء تو یہ ہے کہ رمضان کے بعد اس کی جگہ ایک روزہ رکھیں۔ اور کفارہ یہ ہے کہ ایک غلام آزاد کریں یا اس...


  • پی ڈی ایف کتابوں کی شرعی حیثیت: فقہ اسلامی اور معاصر قوانین کے تناظر میں

    اس موضوع پر ہماری فیس بک کی تحریروں کا مجموعہ ہے کہ جنہیں تہذیب و تصحیح کے بعد شائع کیا جا رہا ہے۔ اس کتابچے کا شان نزول یہ ہے کہ کتاب وسنت ویب سائیٹ اردو زبان میں مذہبی کتب کا سب سے بڑا آن لائن ڈیٹا بیس online database ہے۔ اس ویب سائیٹ پر ہزاروں کتب پی ڈی ایف (pdf) فارمیٹ میں ڈاؤن لوڈنگ کے لیے فری دستیاب ہیں۔ اور قارئین تک اس برقی کتاب (e-book) کو مفت پہنچانے کے لیے ادارے کے لاکھوں روپے خرچ ہوتے ہیں۔ تو کتب کی خریداری، ان کو اسکین کرنے کے لیے قیمتی...


  • مرد اور عورت کی مساوات کے بارے شرعی بیانیہ

    فیمینزم کی تحریکوں کے منشور کا خلاصہ کلام یہ ہے کہ مرد اور عورت برابر ہیں۔ اگر تو برابری سے یہ مراد لی جائے کہ دونوں انسان ہیں تو کس کو اس برابری سے اختلاف ہو گا! دیکھیں، انسان ہونے کے اعتبار سے امیر المومنین حضرت عمر ﷜ اور اسلامی ریاست کا ایک عام شہری دونوں برابر تھے لیکن ایک امیر ہے دوسرا مامور۔ بات اس وقت نظم کی ہو رہی ہے۔ دنیاوی نظم ہو یا دینی، دونوں میں عورت مرد کی ماتحت ہے اور رہے گی۔ یہ امر واقعہ بھی ہے اور شرعی حکم بھی۔ یہ تاریخ کا فیصلہ...


  • جنت میں سیکس اور سیکس میں جہنم

    ملحد (atheist) کا کہنا ہے کہ جہنمی جس سیکس اور شراب کی وجہ سے جہنم میں جائیں گے، جنتیوں کو وہی سیکس اور شراب جنت میں دی جائے گی، یہ کیا بات ہوئی؟ جواب: پہلی نظر میں ملحد کی بات میں کوئی اعتراض معلوم ہوتا ہے لیکن ذرا غور کریں تو اس کا اعتراض بالکل بے جا اور سطحی نوعیت کا ہے۔جہنم میں لوگ سیکس کی وجہ سے نہیں جائیں گے بلکہ اس سیکس کی وجہ سے جائیں گے کہ جس سیکس سے انہیں منع کیا گیا تھا۔ تو اگر اس نے بیوی سے سیکس کیا ہے تو اسے دین...


  • کیا جنت میں شوہر یا بیوی بدلنے کی اجازت ہو گی؟

    یہ سوال کئی ایک لوگ کرتے ہیں، اور بہت اہم سوال ہے، خاص طور ان میاں بیوی کے لیے، جو بیچارے ایک دوسرے سے بہت ہی تنگ ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ صرف بچوں کی خاطر نباہ کیے ہوئے ہیں۔ بہرحال اس قسم کے خیالات دراصل شیطان کا وسوسہ ہیں کہ جب تک دونوں حیات ہوتے ہیں تو باہمی اختلافات اور روز روز کے جھگڑوں کی وجہ سے ایک دوسرے کی شکل دیکھنے کے روادار نہیں ہوتے۔ لیکن جب ان میں سے کوئی ایک دنیا سے چلا جاتا ہے تو دوسرا اس کے پیچھے روتا رہتا ہے اور...